معیاری نچوڑ

0

بڑے پیمانے پر، اعلی معیار کی جڑی بوٹیوں کے نچوڑ اور معیاری عرق الگ الگ مسالوں کے امتحانات میں اس حقیقت کی روشنی میں استعمال کیے جاتے ہیں کہ مستقل مزاجی کے لیے متحرک فکسنگ کا مشاہدہ کیا جا سکتا ہے، حالانکہ باقاعدہ مصالحے کے پاؤڈر بدل جائیں گے۔
ماخذ پلانٹ کی کاشت، کٹائی، پروسیسنگ، اور ذخیرہ کرنے کے حالات معیاری نباتاتی عرقوں میں فائٹو کیمیکلز کی مقدار کو متاثر کر سکتے ہیں۔ مثال کے طور پر، گلاب کی پنکھڑیوں سے نکالے جانے والے غیر مستحکم تیل کی مقدار اس بات پر منحصر ہوتی ہے کہ ان کی کٹائی کب ہوتی ہے۔ اگر آپ ایک جڑی بوٹیوں کا عرق چاہتے ہیں جس میں ہمیشہ ایک مخصوص فائٹو کیمیکل کی ایک ہی مقدار ہوتی ہے، تو آپ کو کمپاؤنڈ پر ایک پرکھ کرنا چاہیے اور خاص طریقوں کا استعمال کرتے ہوئے ارتکاز کو پہلے سے طے شدہ سطح پر ایڈجسٹ کرنا چاہیے۔ ہم پورے تعامل کو "نارملائزیشن" اور اس کے بعد ہونے والے ارتکاز کو "نارملائزڈ ایکسٹریکٹ" کہتے ہیں۔ جیسا کہ آپ دیکھ سکتے ہیں، معیاری کاری کی قیمت زیادہ ہے لیکن آپ کو ایک بہتر پروڈکٹ فراہم کرتا ہے۔
کوئی کہہ سکتا ہے کہ معیاری کاری کے بہت سے اثرات ہوتے ہیں۔ پودوں اور گھر میں اگائے جانے والے ارتکاز میں مختلف فائٹو کیمیکلز ہو سکتے ہیں جن کے انسانی جسم پر مختلف فارماسولوجیکل اثرات ہوتے ہیں۔ ہم فائدہ مند فائٹو کیمیکلز کو ان سے الگ کر سکتے ہیں جو نکالنے کے عمل کے ذریعے ہماری دلچسپی نہیں رکھتے۔
مزید برآں، جڑی بوٹی کو اس کے ناکارہ حصوں کو استعمال کرنے کے بجائے نکالنا سمجھ میں آتا ہے اور اسے پیش کرنا اور استعمال کرنا آسان بناتا ہے۔ ارتکاز معیار کے طور پر ایک ہی چیز نہیں ہے. اسٹینڈرڈائزیشن کا بنیادی مقصد یہ یقینی بنانا ہے کہ صارفین جب بھی پروڈکٹ استعمال کرتے ہیں اسی مقدار میں فعال استعمال کریں۔ یہ ایسی چیز نہیں ہے جو غیر معیاری نچوڑ فراہم کر سکتی ہے۔
معیاری عرقوں کا استعمال صارفین کو ایک اہم فائدہ فراہم کرتا ہے، بشرطیکہ وہ فائٹو کیمیکل جو عرق کے اندر موجود ہوں اور متوقع فائدے کے لیے ذمہ دار ہوں۔ جب ممکن ہو، صارفین کو ہمیشہ فوڈ سپلیمنٹس کو ترجیح دینی چاہیے جن میں معیاری عرق موجود ہوں۔

27